13

دہشتگردی کے خلاف آپریشن سے پاکستان میں دہشتگردی کم ہوئی،امریکی رپورٹ

امریکی ڈیفنس انٹیلی جنس ایجنسی نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جاری آپریشن سے پاکستان میں دہشت گردی اور فرقہ واریت کم ہوئی ہے۔ آرمڈ سروسز کمیٹی میں پیش کی گئی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان سرحدی دراندازی کے خلاف آپریشنز جاری رکھے گا، اس کے علاوہ مغربی افغان سرحد پر بارڈر منیجمنٹ کی کوششیں بھی جاری رکھے گا۔

رپورٹ کے مطابق پاکستان ملک کے اندر بھی دہشت گردی کے خلاف آپریشن جاری رکھے گا، ان کوششوں سے فرقہ وارانہ اور دیگر دہشت گردی کے واقعات میں کمی لانے میں مدد ملے گی تاہم پاکستان افغانستان میں موجود پاکستان مخالف عناصر کے خلاف کارروائی کے لیے افغان حکومت اور امریکا سے بھی توقعات رکھتا ہے۔ پاکستان افغانستان میں موجود پاکستان مخالف عناصر کے خلاف کارروائی چاہتا ہے اور اس کے لیئے امریکا اور افغانستان کی جانب دیکھ رہا ہے ۔

رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان کنٹرول لائن پر جاری مسلسل جھڑپوں کے نتیجے میں کشیدگی بڑھنے کے خطرات ہیں اور توقع یہی ہے کہ اس سال بھی دونوں ممالک لائن آف کنٹرول پر اپنی یہی پوزیشن برقرار رکھیں گے۔ امریکی ڈیفنس انٹیلی جنس ایجنسی نے بھارت سے متعلق رپورٹ میں کہا ہے کہ بھارت عالمی طاقت کے طور پر حیثیت منوانا چاہتا ہے اور اس کے لیے بھارت اپنی ایٹمی طاقت کو ضروری سمجھتا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بھارت پہلی ایٹمی آبدوز تیار کرکے بحریہ کے حوالے کرچکا ہے اور جلد ہی دوسری ایٹمی آبدوز بھی بحری فوج کے حوالے کردی جائے گی۔ رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ بھارت اپنی فوج کو جدید بنانے کے لیے مسلسل کام کررہا ہے تاکہ یہ ثابت کرسکے کہ وہ اپنے اندرونی مفادات کے ساتھ ساتھ بحر ہند میں موجود مفادات کی حفاظت کرسکتا ہے اور ساتھ وہ یہ بھی ظاہر کرسکے کہ وہ ایشیا بھر میں سفارتی اور معاشی پہنچ بھی رکھتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں